انٹرنیشنل

حجاج کرام کی رمی جمرات کے بعد قربانی، حاجیوں نے بال منڈوا کراحرام کھول دیے

منیٰ: حجاج کرام مناسک حج کی ادائیگی میں مصروف ہیں۔ مکہ مکرمہ میں موجود لاکھوں فرزندان اسلام نے  رمی جمرات کے بعد قربانی کا فریضہ انجام دے دیا۔

بعد ازاں حجاج  نے سر منڈوانے کے بعد احرام کھول دیے جس کے بعد انہوں نے طواف زیارت اور سعی کی۔

رمی کے دوران رش سے بچنے کے لیے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں، بدھ اور جمعرات کے دن بھی رمی جمرات کے لیے مخصوص رکھے گئے ہیں۔

مزدلفہ میں شب بھر قیام کےبعد حجاج کرام پہلے دن کی رمی کے لیے منیٰ پہنچے تھے۔

حج بیت اللہ کی سعادت حاصل کرنے والے لاکھوں حجاج نے شیطان کو کنکریاں ماریں اور پھر قربانی کی۔

سعودی حکام کے مطابق اس سال 23 لاکھ 71 ہزار سے زائد عازمین نے فریضہ حج ادا کیا، سعودی عرب میں عیدالاضحیٰ کاسب سے بڑا اجتماع مسجدالحرام اور مسجدنبویؐ میں ہوا جس کے بعد حجاج کی جانب سے تقریباً 20 لاکھ سے زائد جانور قربان کیے گئے۔

منیٰ ، مکہ، مدینہ، جدہ اور دیگر شہروں میں خصوصی مذبح خانوں کا اہتمام کیا گیا تھا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Close