پاکستان

نوازشریف، مریم اور صفدر کی سزا معطلی کیخلاف نیب کی اپیل کل سماعت کیلئے مقرر

اسلام آباد: سپریم کورٹ میں نوازشریف، مریم اور صفدر کی سزا معطلی کے خلاف نیب کی اپیل کل سماعت کے لیے مقرر کردی گئی۔

قومی احتساب بیورو(نیب) نے گزشتہ روز نوازشریف،مریم اور محمد صفدر کی سزا معطلی کا اسلام آباد ہائیکورٹ کا 19 ستمبر کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔

نیب کی جانب سے دائر اپیل میں کہا گیا کہ ہائیکورٹ نے مقدمہ کے شواہد کا درست جائزہ نہیں لیا، ہائیکورٹ نےاپیل کے ساتھ سزا معطلی کی درخواستیں سننے کاحکم دیا تھا، ہائیکورٹ نے اپنے ہی حکم نامے کے برخلاف درخواستوں کی سماعت کی۔

نیب کی اپیل میں اسلام آباد ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔

جیونیوز کے مطابق سپریم کورٹ میں نیب کی اپیل کل سماعت کے لیے مقرر کی گئی ہے اور چیف جسٹس پاکستان نے اس حوالے سے بینچ بھی تشکیل دے دیا ہے۔

جسٹس عمر عطا بندیال کے معاملے پر سپریم کورٹ کی وضاحت

جسٹس جسٹس میاں ثاقب نثار کی جانب سے تین رکنی بینچ میں جسٹس عمر عطا بندیال اور جسٹس مشیر عالم کو شامل کیا گیا تھا تاہم جسٹس عمر عطا بندیال کی جانب سے معذرت کے بعد چیف جسٹس نے جسٹس مظہر عالم میاں خیل کو بینچ میں شامل کر لیا۔

اب کیس کی سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس مشیر عالم اور جسٹس مظہر عالم میاں خیل پر مشتمل تین رکنی بینچ کرے گا۔

سپریم کورٹ کی جانب سے جسٹس عمر عطا بندیال کے بینچ سے الگ ہونے سے متعلق وضاحتی بیان میں کہا گیا ہے کہ جسٹس عمر عطا بندیال نے بینچ سے خود کو علیحدہ نہیں کیا بلکہ ان کی طبیعت خراب ہے اس لیے چیف جسٹس نے دوبارہ بینچ تشکیل دیا۔

سپریم کورٹ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ جسٹس عمر عطا بندیال کی بینچ سے خود کو الگ کرنے کی خبریں بے بنیاد ہیں اور چیف جسٹس نے مختلف چینلز پر چلنے والی خبر کا سخت نوٹس لیتے ہوئے ٹی وی چینلز کے سی ای اوز کو کل دو بجے طلب کر لیا ہے۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ کل سماعت کرے گا اور اس کے متعلقہ فریقین کو نوٹسز بھی جاری کردیئے گئے ہیں۔

واضح رہےکہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم میاں نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد محمد صفدر کی ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا کے خلاف اپیل پر 19 ستمبر کو فیصلہ سناتے ہوئے تینوں کی سزا معطل کرکے رہائی کا حکم دیا تھا۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے 6 جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس میں نوازشریف کو 11، مریم کو 8 اور کیپٹن (ر) محمد صٖفدرکو ایک سال کی سزا سنائی تھی۔

نوازشریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو 13 جولائی کو لندن سے واپسی پر گرفتار کرکے اڈیالہ جیل منتقل کیا گیا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Close