پاکستان

بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی میں اساتذہ کے صبر کا پیمانہ لبریز

بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی میں اساتذہ کے صبر کا پیمانہ لبریز
انتظامیہ نے
کمپیوٹر سائنس کے دو فیکلٹی ممبرز ڈاکٹر شہزاد اشرف اور ڈاکٹر حسنین نقوی کے بعد شعبہ فزکس کے چیئرمین اور پروفیسر ڈاکٹر مشتاق کو بھی گزشتہ ہفتے ٹرمینیٹ کردیا تھا، آج اساتذہ کی بڑی تعداد اس معاملے میں جمع ہے اور اسلامی یونیورسٹی کی ای ایس اے کی قیادت سے مذاکرات جاری ہیں، اس کے بعد صدر جامعہ سے ملاقات کرکے اساتذہ ان کو اپنی تشویش سے آگاہ کریں گے،
معاملے کی جڑ سائنس فیکلٹی کے ڈین ڈاکٹر ارشد ضیا ہیں جن کی پی ایچ ڈی پر سوالیہ نشان بھی ہے اور فنانشل کرپشن کے الزامات بھی ثبوتوں سمیت موجود ہیں لیکن تاحال ان کو ڈین کے عہدے سے الگ نہیں کیا گیا، یہ صاحب اپنی بیگم کو ملے ہوئے سرکاری گھر میں رہتے ہیں اور سالہا سال سے ہائوس رینٹ سبسڈی بھی لے رہے ہیں۔
واضح رہے کہ چند ہفتے قبل طلبا کی بڑی تعداد نے بھی ڈین ڈاکٹر ارشد ضیا کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی تھی اور ان کی بدعنوانیوں اور بداخلاقی و بدانتظامی کی شکایت کی تھی،
ذرائع کے مطابق خواتین اساتذہ کو شکایت ہے کہ ڈین ڈاکٹر ارشد ضیا بغیر اطلاع کے فیمیل کیمپس میں ان کے دفاتر میں آجاتے ہیں اور گھنٹوں بیٹھ کر گپ شپ کے متمنی ہوتے ہیع جس سے انکی کلاس ٹیچنگ اور ریسرچ بےحد متاثر ہوتی ہے، جبکہ ڈین کے چاؤ پورے نہ کرنے والی خواتین اساتذہ کو بار بار ڈین کے میل کیمپس میں دفتر بلایا جاتا ہے ، ان کے ساتھ بدتمیزی اور بد اخلاقی کی جاتی ہے اور مختلف طریقوں سے پریشان کیا جاتا ہے جبکہ خواتین یا مرد اساتذہ میں سے کوئ بھی صدر جامعہ یا ریکٹر سے انکی شکایت کرے تو اس کو ڈین صاحب اور ان کے چمچے فون کالز کرکے دھمکاتے ہیں.

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Close