پاکستان

عابدشیرعلی اور فیاض الحسن چوہان کا ایک دوسرے پرذاتی حملے

محاورہ مشہور ہے کہ اونٹ رے اونٹ تیری کون سی کل سیدھی لیکن پاکستانی سیاست کو دیکھتے ہوئے محاورے میں ترمیم کو جی چاہتا ہے کہ ’’سیاست رے سیاست، تیری کون سی کل سیدھی‘‘۔ عوامی فلاح وبہبود کے لیے منتخب کیے جانے والے نمائندے خدمت بھی کرہی لیں گے لیکن پہلے آپس کی لڑائیاں تو بھگتا لیں۔ تازہ مثال پیش کی ہے عابد شیر علی اور فیاض الحسن چوہان نے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر سابق وزیر مملکت برائے پانی وبجلی عابد شیر علی نے وزیراطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان پر ذاتی حملہ کرتے ہوئے ٹویٹ کیا کہ ’’ن لیگ سے نفرت کی وجہ سے فیاض چوہان نے اپنے نام میں سے ن ہٹا دیا ہے‘‘۔

عابد شیرعلی نے تو غیر ذمہ داری کا ثبوت دیا سو دیا ، فیاض الحسن چوہان بھی پیچھے نہ رہے اور جوابی ٹویٹ میں ٹکر کا جواب دینے کے علاوہ خود اپنے منہ میاں مٹھو بھی بن بیٹھے۔

وزیر اطلاعات پنجاب نے جواب میں عابد شیر علی کو ’’خلائی کھوتا‘‘ قرار دیتے ہوئے نواز شریف کے حوالے سے ڈیل اور زباں بندی کا طعنہ دے ڈالا، لگے ہاتھوں خود کو یا اپنی جماعت کو دلیرانہ اقدامات پر ’’اللہ کا شیر‘‘ کا لقب دے ڈالا۔

فیاض الحسن چوہان اورعابد شیرعلی کی ٹویٹس پر سوشل میڈیا صارفین اپنی سیاسی وابستگی کے حساب سے جواب دے رہے ہیں لیکن کچھ باشعورافراد ایسے بھی ہیں جن کا یہ کہنا ہے منتخب نمائندوں کو یہ زبان وبیاں زیب نہیں دیتا۔ سیاستدانوں کی پہلی ترجیح عوامی خدمت ہونی چاہیئے تا کہ وہ دوسروں کیلئے رول ماڈل بن سکیں

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Close